Harmain

اصل مسئلہ یمن نہیں بلکہ حرمین شریفین ہے۔90کو دہائی میں دشمنانِ صحابہ رضوان اللہ علیہم اجمعین کی حرمین شریفین کیلئے ناپاک عزائم کسی سے ڈھکے چھپے نہیں حرمین الشریفین کی پاسبانی ایمان کا تقاضا ہے: پروفیسر ساجد میر

سعودی عرب کو عدم استحکام کا شکار کرنا کسی مسلمان کا ایجنڈا نہیں ہو سکتا۔ بعض عناصر منفی قوتوں کے ہاتھوں کھیل رہے ہیں انہیں اپنی اصلاح کرنی چاہیے: مفتی عبدالعزیز

پروفیسر ساجد میر نے مفتی اعظم کو یقین دلایا کہ حکومت پاکستان، پاک فوج اور پاکستان کی عوام حرمین شریفین کے تحفظ کے لیے ہر قسم کی قربانی دے گی

مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے کہ حرمین کی پاسبانی ایمان کا تقاضا ہے۔دشمنانِ صحابہ رضوان اللہ علیہم اجمعین کے حرمین شریفین کیلئے ناپاک عزائم کوئی ڈھکے چھپے نہیں۔ نوّے کی دہائی میں حج کے موقع پر ان کی مذموم کاروائیوں سے پوری دنیا آگاہ ہے اور آج امت مسلمہ کا ہر باشعور شخص جانتا ہے کہ اصل مسئلہ یمن نہیں بلکہ حرمین شریفین ہے اور یمن کا واویلا تو صرف چور مچائے شور کا مصداق ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب سے ہماری دوستی اور عقیدت کا تعلق کسی شک وشبہ سے بالاتر ہے جب کہ پاکستان اسلامی دنیا کا اہم ملک ہے اس لئے یمن کی مشکلات حل کرنے میں اسے اپنا بھرپور کردار ادا کرنا چاہئے، ان خیالات کا اظہار پروفیسر ساجد میر نے ریاض میں مفتی اعظم سعودی عرب الشیخ عبدالعزیز کے دوران ملاقات میں یمن کی صورتحال اور سعودی عرب سمیت اسلامی ممالک کے ہاں پیدا ہونے والی تشویش پر تبادلہ خیال کے دوران کہا۔ پروفیسر ساجد میر نے مفتی اعظم کو یقین دلایا کہ حکومت پاکستان، پاک فوج اور پاکستان کی عوام حرمین شریفین کے تحفظ کے لیے ہر قسم کی قربانی دے گی۔ مفتی عبدالعزیزنے کہا کہ حرمین شریفین کا تحفظ ہر مسلمان پر فرض ہے اور یہ ہمارے ایمان کا حصہ ہے۔ پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ یمن کی قانونی حکومت کے خلاف ہتھیار اٹھانے والے اسلام اور مسلمانوں کی کوئی خدمت نہیں کررہے۔ کسی بھی اسلامی ریاست کے خلاف خروج کی شریعت اجازت نہیں دیتی۔ انہوں نے کہا کہ طالبان کے خلاف فتوے لگانے والے حوثی باغیوں کی کس منہ سے حمایت کررہے ہیں۔ کوئی بھی ملک کسی مسلح جتھے کو بندوق کے زور پر اقتدار پر قبضے کی اجازت نہیں دے سکتا۔ اوراگر خدانخواستہ یہ سلسلہ چل نکلا تو پھر فرقہ وارانہ بنیادوں پر قبضوں کی خوفناک روایت چل پڑے گی۔ جس سے اسلامی دنیا کا امن تباہ ہو گا۔ اور دشمن قوتیں یہی چاہتی ہیں کہ مسلمان باہم دست وگریبان رہیں۔ مفتی اعظم سعودی عرب نے مرکزی جمعیت اہل حدیث کی طرف سے سعودی عرب کی بھرپور حمایت کرنے پر شکریہ اداکیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <strike> <strong>