Hafiz Faisal Afzal Shaikh

فرقہ وارانہ قتل وغارت گری کے مسئلہ کو سنجیدہ نہ لیا گیاتو ملک خانہ جنگی کی لپیٹ میں بھی آسکتا ہے‘ فیصل افضل شیخ

 مولانا شمس الرحمن کا قتل فرقہ واریت کو ہوا دینے کی مذموم کوشش ہے، بعض قوتیں شیعہ سنی فساد کی آگ بھڑکانا چاہتی ہیں

ڈرون حملے ملکی سالمیت کیلئے شدید خطرہ ہیں، ملکی خودمختاری داو ¿ پر لگا دی گئی ہے، کوئی پوچھنے والا نہیں

لاہور(نمائندہ الاحسان )اہل حدیث یوتھ فورس پاکستان کے جنرل سیکریٹری حافظ فیصل افضل شیخ نے کہا ہے کہ فرقہ وارانہ قتل وغارت گری کے مسئلہ کو سنجیدہ نہ لیا گیا، بروقت اور درست اقدامات نہ کیے گئے تو یہ سنگین صورت بھی اختیار کر سکتا ہے اور ملک کو فرقہ وارانہ قتل عام سے ایک قدم آگے خانہ جنگی کی لپیٹ میں بھی لے جا سکتا ہے۔ کسی بھی مسلک کے وابستگان کو واجب القتل قراردینے کے فتوے اسلام کی درست ترجمانی نہیں ہیں اور جو لوگ ان پر عمل کرکے بے قصور لوگوں کا قتل عام کررہے ہیں وہ اپنے لیے جنت نہیں جہنم کا سودا کررے ہیں۔ انہوں نے مولانا شمس الرحمن معاویہ کے قتل کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ مولانا شمس الرحمن کا قتل فرقہ واریت کو ہوا دینے کی مذموم کوشش ہے، بعض قوتیں شیعہ سنی فساد کی آگ بھڑکانا چاہتی ہیں۔ اگر راولپنڈی کے سانحے کے ذمہ دار افرادکے خلاف بروقت کارروائی کی گئی ہوتی تو لاہور کا واقعہ پیش نہ آتا۔تفرقہ بازی اور شدت پسندی کے خلاف مذمتی بیانات جاری کرنے سے نفرت کی آگ سرد نہیں کی جا سکتی۔علما کو چاہیے کہ وہ مسلمانوں کے مابین اتفاق و اتحاد کے لیے کوئی ٹھوس قدم اٹھائیں۔ فیصل افضل شیخ نے کہا کہ وطن عزیز اور خطے میں دیرپا امن کیلئے طالبان سے مذاکرات ناگزیر ہے، بندوق کے زور پر امن قائم کرنا ممکن نہیں۔ ڈرون حملے ملکی سالمیت کیلئے شدید خطرہ ہیں، ملکی خودمختاری داو ¿ پر لگا دی گئی ہے، کوئی پوچھنے والا نہیں، ڈرون حملوں سے بے گناہ لوگ مر رہے ہیں، حکومت اس کے سدباب کیلئے ٹھوس اقدامات کریں۔ انھوں نے کہاکہ مذہبی رہنماو ¿ں کاتواترکے ساتھ قتل ملک میں نہ صرف فرقہ وارانہ فسادات کوہوادینا ہے بلکہ ملک کوبدامنی کی جانب لے جانے کی مذموم سازش ہے جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <strike> <strong>