تھرکول سے بننے والی بجلی قوم کو آدھی قیمت پر ملے گی: ڈاکٹر ثمر مبارک مند

وزیراعظم نواز شریف کے دورہ چین سے پاکستان تاریکی سے باہر نکل آئےگا
اسلام آباد (ثناءنیوز) پلاننگ کمیشن آف پاکستان کے تھرکول گیس فیکشن بجلی کے منصوبے کے سربراہ اور شہرہ آفاق ایٹمی سائنسدان ڈاکٹر ثمر مبارک مند کا کہنا ہے کہ چین کی شراکت سے تھر کے بلاک نمبر دو میں کوئلے کی کان کنی کا جو منصوبہ وزیراعظم نواز شریف اور چینی وزیراعظم کے مابین پایا ہے ،سے آئندہ دو سال میں تھر سے کوئلے کی سپلائی پہلی بار شروع ہوجائے گی جس سے تھر میں بجلی کی پیداوار کا آغاز ہوجائے گا۔ایک انٹرویو میں انکا کہنا تھا کہ اس طرح تھرکوئلے کی بجلی نصف قیمت پر پاکستانی قوم کو ملا کرے گی۔ ڈاکٹر ثمر مبارک مند نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ تھر کے کوئلے سے سستی بجلی بنانے کے نتیجے میں پاکستان گردشی قرضوں سے بہت حد تک چھٹکارا پائے گا۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف کے دورہ چین سے پاکستان تاریکی سے باہر نکل آئےگا ساہیوال کا 320 میگا واٹ کا کوئلے بجلی پیداوار کرنےوالا منصوبہ اور قائداعظم سولر پارک بہاولپور (چولستان) سے ایک ہزار میگا واٹ بجلی کی فراہمی بھی بہت حد تک بجلی کی لوڈشیڈنگ کم کرنے میں مدد کرےگی۔ امید ہے کہ ساہیوال بجلی کا منصوبہ آئندہ تین سے چار سال میں بجلی کی فراہمی شروع کردےگا۔ اس کےساتھ ساتھ قائداعظم سولر پاور پلانٹ سے بہت کم لاگت سے بجلی کی فراہمی اگلے دو اڑھائی سال میں ممکن ہوجائےگی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.